ابھی فیصلہ نہیں ہوا کہ نواز شریف کا علاج کہاں ہو سکتا ہے : ڈاکٹر عدنان
02 اپریل 2019 (12:34) 2019-04-02

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان نے کہا ہے کہ لندن میں مقیم نواز شریف کے معالج ڈاکٹرلارنس سے مشاورت جاری ہے ، دیکھا جارہا ہے کہ نواز شریف کا پاکستان میں علاج ہوسکتا ہے یا نہیں ۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 6 ہفتے میں نوازشریف کا علاج ہوسکتا ہے یا نہیں ، یہ کہنا قبل ازوقت ہے ۔ڈاکٹرعدنان نے کہا کہ علاج اور ٹیسٹوں کے لیے سینئر پروفیسرز پر مشتمل بورڈ تشکیل دیا گیا ہے ، لندن میں مقیم نواز شریف کے معالج ڈاکٹر لارنس سے مشاورت جاری ہے ۔

نوازشریف کے ذاتی معالج نے کہا کہ نوازشریف جیل میں رہے، اسپتال میں منتقل کرنے کے لیے تجزیہ کیا جا رہا ہے ۔ڈاکٹرعدنان نے کہا کہ دیکھا جارہا ہے کہ نواز شریف کا پاکستان میں علاج ہوسکتا ہے یا نہیں ۔


ای پیپر