فوٹوبشکریہ فیس بک

کنٹریکٹ پر بھاری تنخواہیں لینے والے خود چلیں جائیں: شیخ رشید
01 ستمبر 2018 (16:08) 2018-09-01

لاہور: وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ کنٹریکٹ پر بھاری تنخواہیں لینے والے خود چلیں جائیں، میرا فوکس بزنس بڑھانا اور مارکیٹنگ ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے ریلوے ہیڈکوارٹرز آفس میں اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کنٹریکٹ ملازمین خود ہی گھر چلے جائیں، ریلوے مزدوروں کی 23 یونینوں سے مذاکرات کیے ہیں، 4 ہزار کنٹریکٹ ملازمین کے بارے میں ایسا فیصلہ ہو جو درمیانی ہو، اللہ نے مدد کی تو ایک سال میں لوگ کہیں گے ریلوے واقعی کھڑی ہوگئی۔

لاہور سے شالیمار کا کیس نیب کو بھیج رہے ہیں، ریلوے چلانے کیلئے اپنے برتن نہیں بیچیں گے، زیادہ سے زیادہ بزنس لائیں، سسٹم میں ایک آپریشنل انجن بھی بے کار نہ ہو کیونکہ دیانتدار آدمی محکمے کا رخ بدل سکتا ہے، سو بے ایمان ملکر کچھ نہیں کرسکتے۔

شیخ رشید احمد نے مزید کہا کہ ریلوے کا اصل مسئلہ مسافر نہیں فریٹ ہے، شالیمار ہسپتال کا کیس نیب کو بھجوا رہے ہیں، 55 انجنوں کا نیب کا کیس ہے، اگلے ہفتے تک بھاری تنخواہوں والے از خود چلے جائیں، موثر مانیٹرنگ کیلئے ٹرینوں میں ٹریکر لگا رہے ہیں، کوئی ریلوے انجن شیڈ میں کھڑا نہیں ہوگا۔

وفاقی وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ موثر مانیٹرنگ کیلئے ٹرینوں میں ٹریکر لگا رہے ہیں، ریلوے کی زمین کے ریکارڈ کیلئے ریونیو ڈائریکٹر کو خط لکھوایا ہے، گھوسٹ پنشنرز کو نکال دیا ہے جبکہ 100 دن میں بتائیں گے کہ ہم نے کن شعبوں میں کٹ لگائے ہیں۔


ای پیپر