برطانوی وزیر اعظم پر خاتون ہراسانی کا الزام
01 اکتوبر 2019 (16:21) 2019-10-01

لندن: برطانوی وزیر اعظم کی مشکلات ختم ہونے کا نام نہیں لے رہیں اور اب ان پر ایسا الزام لگ گیا ہے جس کے بعد ان کے عہدے کو بھی خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بورس جانسن پر ایک خاتون کے ساتھ چھیڑ خانی کا الزام لگ گیا ہے۔  الزام ایک خاتون صحافی شالورٹ ایڈورڈیس نے عائد کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ 20 سال قبل ایک پروگرام میں انہوں نے قابل اعتراض رویہ اختیار کیا تھا۔ خاتون صحافی شالورٹ ایڈورڈیس نے اپنے کالم میں لکھا ہے کہ بورس جانسن نے 1999 میں ایک پارٹی کے دوران ان کے ساتھ قابل اعتراض سلوک کیا تھا۔شالورٹ ایڈورڈیس نے دعوی کیا ہے کہ مذکورہ پروگرام کے بعد جب انہوں نے ایک اور خاتون سے اس کے متعلق بات کی تو انہوں نے بھی کہا کہ بورس جانسن نے ان کے ساتھ بھی وہی سلوک کیا تھا۔

برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن نے ایسے کسی بھی الزام سے صاف انکار کیا ہے۔ وہ بحیثیت وزیراعظم کنزرویٹو پارٹی کے نامزد کردہ ہیں۔برطانیہ کے موجودہ وزیراعظم بورس جانسن اس وقت میگزین اسپیکٹیٹر کی ایڈیٹنگ کر تے تھے۔یاد رہے کہ بورس جانسن کی بحیثیت وزیراعظم نامزدگی پر امریکی صدر نے انہیں مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ بھی برطانیہ میں میری طرح مقبول ہیں اور لوگ انہیں برطانیہ کا ٹرمپ کہتے ہیں کیونکہ وہ میری طرح دکھائی دیتے ہیں۔


ای پیپر