سابق صدر پرویز مشرف خطرناک بیماری میں مبتلا ،انتہائی تشویشناک خبر
01 اکتوبر 2018 (22:20) 2018-10-01

اسلام آباد:آل پاکستان مسلم لیگ کے رہنما ڈاکٹر محمد امجد کا کہنا ہے کہ پاکستان کے سابق صدر ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف ایک نامعلوم بیماری میں مبتلا ہیں جس کی وجہ سے وہ تیزی سے کمزور ہو رہے ہیں اور اپنے خلاف غداری کیس کا سامنا کرنے کیلئے پاکستان واپس نہیں آسکتے ۔


قومی اخبار کی رپورٹ کے مطابق پر ویز مشرف کی پارٹی اے پی ایم ایل کے سابق سر براہ ڈاکٹر محمد امجد نے سابق صدر کی بیماری سے متعلق بتایا کہ 3ماہ بعد انہیں لندن جا کر اپنی بیماری کا علاج کرا نا ہو گا ۔ڈاکٹر امجد کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کی ریڑھ کی ہڈی میں فریکچر تھا جس کا اعلاج امریکہ سے کروایا گیا لیکن آج کل پرویز مشرف نامعلوم بیماری میں مبتلا ہیں جس کیلئے ہر 3ماہ ان کو لندن جا کر علاج کروانا ہو تا ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ الیکشن 2018سے ہم نے پارٹی کی طرف سے بہت کوشش کی تھی کہ پر ویز مشرف کو پاکستان لاکر عملی سیاست میں حصہ لے سکیں لیکن حکومتی رکاوٹوں کی وجہ سے وہ پاکستان نہ آسکے ، پرویز مشرف چاہتے ہیں کہ وہ پاکستان آئیں اور عدالتوں کا سامنا کریں لیکن دوسری طرف وہ چاہتے ہیں کہ فری ٹرائل بھی کیا جائے اور بیرون ملک علاج کی سہولت بھی فراہم کی جائے ۔

واضح رہے کہ پرویز مشرف پر فرد جرم عائد ہو چکی ہے اور تاحال وہ عدالتوں سے مفرور ہیں ۔


ای پیپر