ہمارا ایمان نبی کرمﷺ پر ایمان لائے بغیر مکمل نہیں: چیف جسٹس
کیپشن:   فوٹوبشکریہ فیس بک سورس:   
01 نومبر 2018 (11:46) 2018-11-01

اسلام آباد: چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نے ریمارکس دیئے ہوئے کہا کہ کسی کو یہ شک نہیں ہونا چاہیے کہ سپریم کورٹ کے جج عاشق رسول ﷺنہیں، ہمارا ایمان نبی کرمﷺ پر ایمان لائے بغیر مکمل نہیں۔

آئی جی اسلام آباد تقرری کیس کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے چیف جسٹس نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ججز صرف مسلمانوں کے نہیں پاکستان کے ہر شہری کے قاضی ہیں۔ کسی نے کل والے فیصلے کو تفصیلی پڑھا ہے؟ اس فیصلے میں ہم نے نبی کرمﷺ پر ایمان سے متعلق تفصیلی بات کی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کسی کے خلاف کیس نہ بنتا ہو تو انہیں سزا کیسے دیں، ثبوت اور ایمان میں فرق ہے۔ میں نے نبی کریم ﷺ کی حرمت اور سچائی کی وجہ سے اللہ کی ذات کو پہچانا، ناموس رسالت پر توہین برداشت نہیں کرسکتے، ناموس رسالت پر جانیں قربان کرنے کے لیے تیار ہیں۔ اٹارنی جنرل آپ کے وزیراعظم نے بھی کل تقریر میں ذکر کیا ہے۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ موجودہ حالات کو سنبھالنا ریاست کی ذمہ داری ہے ہم وفاقی حکومت کو عبوری آئی جی کی تعیناتی کی اجازت دیتے ہیں۔ دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی جی اسلام آباد جان محمد ملائشیا سے رات گئے اسلام آباد پہنچے ہیں۔

یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے حال ہی میں آئی جی اسلام آباد جان محمد کو عہدے سے ہٹا دیا تھا جس پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے از خود نوٹس لیتے ہوئے تبادلہ روک دیا تھا۔


ای پیپر