فوٹو بشکریہ فیس بک

شریف خاندان کیخلاف علم بغاوت نئے پاکستان کی قیادت پر اعتماد ہے: فردوس عاشق اعوان
01 جولائی 2019 (12:11) 2019-07-01

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان سے ن لیگ کے ارکان پنجاب اسمبلی کی ملاقات کا شور ابھی ختم نہیں ہوا، فردوس عاشق اعوان کہتی ہیں رانا ثناءاللہ کا اپنی صفوں میں بغاوت کا اعتراف ن لیگ کے سیاسی مورچے میں واضح شگاف کا ثبوت ہے۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات نے ٹویٹ کیا کہ ارکان پنجاب اسمبلی کی وزیراعظم سے ملاقات ن لیگی قیادت کی آمرانہ سوچ، شاہانہ مزاج اور سیاسی لمیٹڈ کمپنی کے خلاف بغاوت ہے۔ یہ ارکان موروثی غلامی کے لئے تیار نہیں کیونکہ اب ن لیگ کے پاس نہ تو کوئی بیانیہ ہے اور نہ ہی قیادت۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے مستقبل سے کھیلنے والوں کا مستقبل تاریک ہوچکا ہے۔ جمہوریت اور آئین کی بالادستی کا رونا رونے والوں کے منہ سے مڈٹرم انتخابات کی بات کون سی جمہوریت ہے؟ مغلیہ شاہی خاندان کے خلاف علم بغاوت کا مطلب نئے پاکستان کے قافلے، نظریے اور قیادت پر اعتماد ہے۔

دوسری جانب سے ن لیگی ارکان اسمبلی مسلسل وضاحتیں دے رہے ہیں، اب جہانیاں سے لیگی ایم این اے چودھری افتخار نذیر اور ایم پی اے حاجی عطاء الرحمٰن نے تردید کی ہے کہ وہ وزیراعلیٰ پنجاب اور وزیراعظم عمران خان سے ملنے والوں میں شامل نہیں، لیگی ارکان اسمبلی کا دعویٰ ہے کہ مسلم لیگ ن میں کوئی فاروڈ بلاک نہیں بنایا جا رہا۔


ای پیپر