سال 2018ء.... کیا کچھ ہوا؟
کیپشن:   Image Source : Naibaat Mag
01 جنوری 2019 (23:21) 2019-01-01

مدثرنذرقریشی:

سال 2018ءپاکستان کے لیے انتہائی اہم سال رہا، کیونکہ اس سال نہ صرف الیکشن ہونے کے ساتھ حکومت تبدیل ہوئی بلکہ بہت سارے سیاسی بُرج بھی اُلٹے۔ بہت سے سابق حکمران کڑے احتساب کا شکار ہو کر جیل میں پہنچ گئے۔ عمران خان کی 22 سالہ طویل جدوجہد کے بعد بالآخر انہیں وزارتِ عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کا موقع ملا۔ تحریک انصاف پہلی بار حکومت میں آئی اور عمران خان نے وزیراعظم بنتے ہی حکمرانوں کو لوٹ مار اور ملک کو دیوالیہ بنانے، ملکی معیشت کو کمزور کرنے کی پاداش میں اقدامات کیے اور 100 روزہ پلان ترتیب دیا۔ تحریک انصاف نے جہاں پنجاب میں ایک چھوٹے سے ضلع تونسہ شریف سے نومنتخب رُکن سردار عثمان بزدار کو وزیراعلیٰ پنجاب بنایا، وہیں بہت سے اہم فیصلے بھی کیے۔ سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید، 2.5 ملین ڈالر جرمانہ، 10سال سرکاری عہدوں کیلئے نااہل قرار پائے۔ ان کے چھوٹے بھائی شہباز شریف بھی آشیانہ ہاﺅسنگ سکینڈل میں گرفتار ہو کر جوڈیشل ریمانڈ پر کوٹ لکھپت جیل میں ہیں، جنہیں بعد ازاں پبلک اکاو¿نٹس کمیٹی کا چیئرمین بنا دیا گیا۔ اسی طرح مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما خواجہ سعد رفیق، خواجہ سلمان رفیق بھی ہاﺅسنگ سکینڈل میں جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں ہیں۔ دوسری طرف آصف زرداری، ان کی بہن فریال تالپور، انورمجید،ریحان علی وغیرہ پر منی لانڈرنگ اور اومنی گروپ کے کیسز چل رہے ہیں۔ اسی طرح سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف پر پیپکو میں 437 افراد کو غیرقانونی بھرتی کرنے کا کیس احتساب عدالت لاہور میں چل رہا ہے۔ پیپلزپارٹی کے رہنما آصف ہاشمی بھی مختلف کیسز میں احتساب عدالت اور ایف آئی اے کورٹ میں پیشیاں بھگت رہے ہیں۔ فیصل رضاعابدی بھی توہین عدالت کیس میں اڈیالہ جیل میں سزا کاٹ چکے ہیں۔ آنے والے دنوں میں مزید سیاسی رہنماﺅں کے کڑے احتساب کے ساتھ جیل میں جانے کی خبریں بھی کافی سرگرم ہیں۔ اب ذرا سال 2018ءکے آغاز سے لے کر اب تک کے اہم واقعات نظر دوڑاتے ہیں۔

جنوری 2018ئ

یکم جنوری:عوام پر پٹرول بم گھرایا گیا پٹرول 4روپے 6 پیسے، ڈیزل 3روپے 96پیسے اور مٹی کا تیل 6 روپے 74 پیسے فی لٹرمہنگا ہوا۔

آرمی چیف نے کہا کہ 2018ءانتہائی اہمیت کا سال، پاکستان کے عزم کو کوئی شکست نہیں دے سکتا۔

2 جنوری: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ پاکستان نے امداد کے بدلے دھوکہ دیا،جس پر امریکی سفیر کی دفتر خارجہ میں طلبی ہوئی اور شدید احتجاج کیا گیا۔

جماعت الدعوة، ذیلی اداروں کو چندہ دینے پر پابندی عائد کی گئی۔

3جنوری: قومی سلامتی کے علامیہ میں کہا گیا کہ ٹرمپ کے بیان پر تشویش ہے، دہشت گردوں کیخلاف بلاامتیاز کارروائیاں کیں، قربانیاں تسلیم نہ کرنا افسوسناک اور اتحادیوں پر الزام تراشی نقصان دہ ہے۔

امریکی دھمکیوں کے خلاف ملک گیر احتجاج ہوا، ٹرمپ کے پُتلے، امریکی پرچم نذرآتش کیا گیا۔

نوازشریف اور میاں شہباز شریف کی سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ملاقات ہوئی۔

5جنوری: وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پہلے سیف سٹی پراجیکٹ کا افتتاح کر دیا .... امریکہ نے پاکستان کی سکیورٹی امداد بھی روک دی .... پارلیمانی قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس میں امریکی الزامات مسترد کئے گئے۔

معروف ماہرامورخانہ داری زبیاآپا انتقال کر گئیں۔

6جنوری: تحریک استقلال کے بانی، پہلے ایئرچیف اصغرخان انتقال کر گئے۔

8جنوری: تحریک عدم اعتماد، بلوچستان کا سیاسی بحران سنگین ہوگیا۔ ملکی تجارتی خسارہ 36ارب ڈالر سے تجاوز کرگیا، برآمدات میں 345ملین ڈالر کی کمی ہوئی۔

9جنوری: بیگم کلثوم نواز کی لندن میں پانچویں کیموتھراپی ہوئی۔

ملتان میں ٹریلر، وین، موٹرسائیکل کی ٹکریں، 12افرادجاں بحق ہوئے۔

ڈالر کی اوپن مارکیٹ میں قیمت 113 روپے سے اُوپر چلی گئی۔

10جنوری: وزیراعلیٰ بلوچستان ثناءاللہ زہری مستعفی ہوئے، کابینہ تحلیل کر دی گئی۔ بلوچستان اسمبلی کے قریب خودکش دھماکہ ہوا،5 اہلکاروں سمیت7شہید اور 17زخمی ہوئے۔

11جنوری: قصورمیں 7سالہ معصوم بچی زینب کا زیادتی کے بعد قتل کا واقعہ پیش آیا۔ قصور میں مظاہرے، پولیس فائرنگ سے 3 افراد جاں بحق اور10زخمی ہوئے۔

12جنوری: میرعبدالقدوس بزنجو وزیراعلیٰ بلوچستان کیلئے متفقہ امیدوار نامزد ہوئے۔

14جنوری: شاہ زیب قتل کیس، شاہ رُخ جتوئی سمیت تمام ملزموں کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوئے۔

مسلم لیگ ق کے عبدالقدوس بزنجو وزیراعلیٰ بلوچستان منتخب ، 14رُکنی کابینہ نے حلف اُٹھا لیا۔

16جنوری: کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت، پاک فوج کے 4جوان شہید ہوئے، جوابی کارروائی میں 3انڈین فوجی بھی مارے گئے۔

18جنوری: آشیانہ ہاﺅسنگ سکینڈل میں شہبازشریف کو22 جنوری کو نیب لاہور طلب میں طلب کیا گیا۔

23جنوری: لندن فلیٹس کیس میں نوازشریف خاندان کیخلاف ضمنی ریفرنس دائر ہوا۔

پنجاب یونیورسٹی میں 2طلبہ گروپوں کے مابین تصادم میں ، کمرے کو آگ لگائی گئی۔

24 جنوری: ننھی زینب کاسفاک قاتل عمران گرفتار ہوا۔

آشیانہ ہاﺅسنگ سکینڈل میں نیب نے خواجہ سعد رفیق کوطلب کیا۔

25جنوری: اورکزئی ایجنسی میں امریکی ڈرون حملے میں شدت پسند کمانڈر احسان اللہ ہلاک ہوا۔

26جنوری: کالعدم تنظیموں کے 17کمانڈرز سمیت 200 فراری قومی دھارے میں شامل ہوئے۔

27جنوری: ڈاکٹرشاہد مسعود کا دعویٰ غلط، زینب کے قاتل عمران کا کوئی بینک اکاﺅنٹ نہ نکا۔

28جنوری: وزیراعظم شاہدخاقان عباسی کی انڈونیشیا کے صدر جوکوویدو سے ملاقات ہوئی۔

29جنوری ©: پاکستان نے ٹی ٹونٹی میچ میں نیوزی لینڈ کو شکست دے کر سیریزاپنے نام کرلی۔

31 جنوری: احتساب عدالت میں ایون فیلڈ پراپرٹیز پر سابق وزیراعظم نوازشریف کے اعتراضات مسترد ہوئے۔

فروری 2018ئ

یکم فروری: پاکستان میں 6.2 شدت کا زلزلہ آیا، بلوچستان میں دو افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوئے۔

ایک اور پٹرولیم بم چلا،پٹرول 2روپے 98پیسے، ڈیزل 5روپے 92پیسے، مٹی کا تیل 92پیسے فی لٹر مہنگا).... پٹرول 84روپے 51پیسے، ہائی سپیڈ ڈیزل 95روپے 83پیسے پر پہنچ گیا ....

2فروری: توہین عدالت کیس، نہال ہاشمی گرفتار، 5سال کیلئے نااہل ہوئے۔ سابق ایل اوسی پر بھارتی فائرنگ، خواتین سمیت 9 افراد زخمی ہوئے۔

3فروری: جے ایف 17 تھنڈر کے ذریعے فضا سے فضا میں مار کرنے والے میزائل کا کامیاب تجربہ کیا گیا۔

4فروری: سوات میں آرمی یونٹ پر خودکش حملہ ہوا جس میں افسر سمیت 11اہلکار شہید اور13زخمی ہوئے۔

مردان میں تقریب میں شرکت سے انکار پر سٹیج اداکارہ سنبل کو قتل کر دیا گیا۔

5فروری: مشاہد حسین سید دوبارہ مسلم لیگ ن میں شامل ہوئے۔ پاکستان سمیت دُنیابھر میں یوم یکجہتی کشمیر منایا گیا۔

6فروری: آصف زرداری کا موچی گیٹ لاہور میں جلسہ ہوا، ایم کیوایم پاکستان 2دھڑوں میں تقسیم، کامران ٹیسوری 6 ماہ کیلئے معطل ہوئے۔

7فروری: آزادکشمیر اسمبلی میں قادیانیوں کو غیرمسلم قرار دینے کا بل متفقہ طورپرمنظور ہوا۔

8فروری: ولی خان یونیورسٹی میں قتل ہونے والے طالب علم مشال کے قاتل کو سزائے موت، 5 مجرموں کو عمرقید، 25 کو 5،5سال قید ہوئی۔ قومی اقتصادی کونسل نے 1.63کھرب کے منصوبوں کی منظوری دی۔

9فروری: 144سینیٹ امیدواروں کے کاغذات جمع ، جانچ پڑتال کیلئے نیب، نادرا، سٹیٹ بینک سے مدد طلب کی گئی۔

اردن کے شاہ عبداللہ کی وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے ملاقات ہوئی۔

12فروری: رابطہ کمیٹی نے فاروق ستار کو مائنس کر دیا، خالد مقبول کنوینئرمنتخب ہوئے۔

معروف قانون عاصمہ جہانگیر کا حرکت قلب بند ہوجانے کے باعث انتقال ۔ معروف اداکار قاضی واجد بھی دل کا دورہ پڑنے سے چل بسے۔

14فروری: وزیرآباد میں بس، وین تصادم میں 9 افراد جاں بحق، بھلوال میں گاڑی اُلٹنے سے 5 افراد زندگی کی بازی ہار گئے۔

15فروری: نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی گئی۔ نیب نے سابق وزیراعظم کیخلاف فلیگ شپ، العزیزیہ ریفرنس دائر کردیئے، حسن، حسین نواز کی آف شور کمپنیوں کی نئی تفصیلات بھی ضمنی ریفرنس کا حصہ بنیں۔

کوئٹہ میں امن دُشمنوں کا وار، دہشت گردوں کی فائرنگ سے 4 اہلکار شہید ہو ئے۔.... جماعة الدعوة کے فلاحی ادارے محکمہ اوقاف کے حوالے، اثاثے منجمد، سرگرمیوں پر پابندی لگائی گئی۔

16فروری: بھارتی فوج کی کنٹرول لائن میں سکول وین پر فائرنگ میں ڈرائیور شہید، جوابی کارروائی میں 5 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے۔میموسکینڈل میں حسین حقانی کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوئے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے سعودی سفیر نواف سعیدالمالکی کی ملاقات ہوئی۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس یاورعلی کی منظوری کے بعد سول کورٹ میں لاہور کی تاریخ میں پہلی بار ”فاسٹ ٹریک کورٹس“ کے نام سے 4عدالتیں قائم،سیشن جج نے 500 مقدمات منتقل کئے گئے۔

17 فروری: مطلوب الرحمن عرف منالاہوری (زکوٹا جن) کاانتقال ہوا۔ پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی سے ترکی کے نئے سفیر کی ملاقات .... ہوئی۔

18 فروری: ننھی زینب کا قاتل نشان عبرت، 4بار سزائے موت کی سزا عمرقید، 20لاکھ روپے جرمانہ ہوا۔

19فروری: عمران خان نے بشریٰ مانیکا سے تیسری شادی کی۔ نیب کی شہبازشریف کے خلاف خادم پنجاب روڈپروگرام اور میٹروبس ملتان میں کرپشن کی تحقیقات شروع ہوئیں۔ایم کیوایم کے انٹراپارٹی الیکشن، فاروق ستار دوبارہ کنوینئر منتخب ، نئی رابطہ کمیٹی بھی تشکیل دی گئی۔

21فروری: نیب نے 3 ریٹائرڈ جرنلز کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کیا۔ اراضی تنازع پر وکلاءگروپوں میں تصادم، فائرنگ سے 2 افراد قتل ہوئے۔

22فروری: نوازشریف مسلم لیگ ن کی صدارت کیلئے بھی نااہل قرار پائے۔

آشیانہ اقبال ہاﺅسنگ سکینڈل میں احدچیمہ کا 11روزہ ریمانڈ منظور ہوا۔

24فروری: پاکستان واچ لسٹ سے بچ گیا، امریکی مہم ناکام۔ 10ارب ڈالر کے تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کا افتتاح کیا گیا۔ 6ملکوں کے دفاعی اتاشیوں کا ایل او سی کا دورہ، بھارتی جارحیت پر بریفنگ دی گئی۔

26فروری: شہبازشریف مسلم لیگ ن کے قائم مقام صدر۔

27فروری: اورنج ٹرین چل پڑی، پہلا مختصر آزمائشی سفر کامیاب رہا۔

28فروری: نوازشریف تاحیات پارٹی قائد، شہبازشریف قائم مقام صدر ۔

مارچ 2018ئ

یکم مارچ: پٹرول 3.56،ڈیزل 2.62، مٹی کا تیل 6.28روپے فی لٹرمہنگا ہوا۔ پٹرول کی نئی قیمت 88.7، ڈیزل 98.45 ہوئی۔ بلوچستان میں ایف سی کیمپ پر خودکش حملہ، فائرنگ، 6 سکیورٹی اہلکار شہید ہوئے۔

3مارچ: سینیٹ انتخابات ہوئے۔ڈاکٹرعاصم کوعلاج کیلئے دبئی جانے کی اجازت دی گئی۔

6مارچ: شریف خاندان، عمران خان، پرویزخٹک اور کئی اعلیٰ افسروں کیخلاف انکوائری کی منظوری دی گئی۔

8مارچ: شریف خاندان کیخلاف نیب ریفرنسز نمٹانے کیلئے مدت میں 2 ماہ توسیع کی گئی۔

11مارچ: خواجہ آصف پر سیاہی پھینکی گئی۔

12مارچ: چیئرمین سینیٹ کا انتخاب ہوا جامعہ نعیمیہ لاہور میں نوجوان نے میاں نوازشریف پر جوتا اچھالا۔

13مارچ: صادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ، سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین سینیٹ منتخب ہوئے۔

14مارچ: شہباز شریف ن لیگ کے بلامقابلہ صدر منتخب ہوئے۔

15مارچ: رائیونڈ میں پولیس چوکی کے قریب خودکش دھماکے میں، 9 شہادتیں ہوئیں۔

17مارچ: پرویزمشرف کی گرفتاری کیلئے انٹرپول سے رابطے کا حکم دیا گیا۔

20مارچ: انسداددہشت گردی عدالت نے علامہ خادم رضوی، پیرافضل قادری کی گرفتاری کاحکم دیا ۔ قذافی سٹیڈیم لاہور میں پی ایس ایل تھری کے پلے آف میچ کا کامیاب انعقاد ہوا۔

21مارچ: ڈالر ریکارڈ مہنگا، 118.50 روپے تک پہنچ گیا۔

22مارچ: راﺅانوار سپریم کورٹ پیشی کے بعد گرفتار ہوئے۔

23مارچ: پاکستان کو چین سے جدید میزائل ٹریکنگ سسٹم مل گیا .... 78واں یوم پاکستان، اسلام آباد میں فوجی پریڈ کااہتمام ہوا سری لنکا اورپاکستان کے صدورنے تقریب میں شرکت کی۔

29مارچ: سکھرمیں گودام کی چھت گرنے سے 6خواتین اور بچی سمیت 13مزدور جاں بحق ہوئے۔

اپریل 2018ئ

یکم اپریل: پٹرول 2.07، ڈیزل 2روپے سستا، پٹرول کی قیمت 86 اور ڈیزل 96.45روپے فی لٹر مقرر ہوئی۔

4اپریل: برکت مارکیٹ لاہور میں بیکری میں آتشزدگی کی وجہ سے دم گھٹنے پر 5افراد جاں بحق ہوئے۔ کراچی میں پاکستان نے ٹی ٹونٹی سیریز میں ویسٹ انڈیز کو وائٹ واش شکست دی۔

8اپریل: اسلام آباد میں امریکی ملٹری اتاشی کی گاڑی نے 22 سالہ نوجوان کو کچل دیا۔

10اپریل: مسلم لیگ ن کے 8ارکان اسمبلی سے مستعفی ہئے، پارٹی بھی چھوڑ دی۔ جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کااعلان کیا گیا.... امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف کے فرار کی کوشش ناکام، نام واچ لسٹ میں شامل کیا گیا۔

14اپریل: نوازشریف، جہانگیر ترین کو تاحیات نا اہل قرار دیا گیا۔....

17اپریل: نوازشریف، مریم نواز، شاہدخاقان عباسی کی عدلیہ مخالف تقاریر نشر کرنے پر پابندی عائد کی گئی۔

21اپریل: شریف خاندان سے اضافی سکیورٹی واپس لے لی گئی۔ جاتی امراءسے 100اہلکار ہٹائے گئے۔

25اپریل: کوئٹہ میں 1گھنٹے میں 3خودکش دھماکے ہوئے جن میں 6 پولیس اہلکار شہید، 14زخمی، 3 حملہ آور ہلاک ہوئے۔

28اپریل: قومی اسمبلی میں 50کھرب 932ارب 50کروڑ کا وفاقی بجٹ پیش کیا گیا۔ترقیاتی کاموں کیلئے 20 کھرب 43ارب روپے مختص، دفاعی بجٹ میں 180ارب روپے اضافہ کیا گیا۔ ....

30 اپریل: عمران خان کا مینارپاکستان میں جلسہ، 11نکاتی ایجنڈا پیش کیا گیا۔

مئی 2018ئ

یکم مئی: پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، پٹرول 1.70، ڈیزل 2.31، لائٹ ڈیزل 3.55 اورمٹی کا تیل 3.41 روپے مہنگا کیا گیا۔ چودھری نثار نے ایک قومی اور 2 صوبائی حلقوں سے الیکشن لڑنے کا اعلان کیا۔

3مئی: سپریم کورٹ نے دوہری شہریت پر نااہل ارکان سے 5،5 لاکھ روپے واپس لینے کا حکم دیا۔

7 مئی: نارووال جلسے میں احسن اقبال قاتلانہ حملے میں زخمی ہوئے۔ حملہ آور گرفتار ہوا۔

13مئی: نوجوان ہلاکت کیس، امریکی اتاشی کرنل جوزف کو امریکہ لے جانے کی کوشش ناکام بنائی گئی، سی 130 طیارہ نورخان ایئربیس پر کئی گھنٹے انتظار کے بعد واپس روانہ ہوا۔

لیجنڈ اولمپئن منصور احمد کا انتقال ہوا۔

18مئی: کوئٹہ میں ایف سی مددگارسنٹر پر حملہ ناکام، 5دہشت گرد ہلاک، 4 جوان زخمی ہوئے۔

23مئی: پنجاب میں 965 پولیس انسپکٹر تبدیل کئے گئے۔

25مئی: قومی اسمبلی کے اجلاس میں فاٹا کا خیبرپختونخواہ میں انضمام کے حوالے سے ترامیم بل منظور کیاگیا۔ نوازشریف نے بھارت رقم منتقلی کے الزام پر چیئرمین نیب کو قانونی نوٹس بھجوایا۔

28مئی: فاٹاانضمام بل خیبرپختونخواہ اسمبلی سے بھی منظور ہوا، 92 ارکان کی حمایت، 7 نے مخالفت میں ووٹ دیا۔ پاکستان کے ایٹمی طاقت بننے کی 20 ویں سالگرہ شایان شان طریقے سے منائی گئی۔

جون 2018ئ

یکم جون: دوسرا جمہوری دور مکمل، اسمبلیاں تحلیل ، انتخابی شیڈول کا اعلان ۔ کیا گیا الیکشن 25 جولائی کوکروانے کا فیصلہ کیاگیا۔ پرویزمشرف کا شناختی کارڈ، پاسپورٹ بلاک کر دیاگیا۔

2جون: سابق چیف جسٹس ناصرالملک نے نگران وزیراعظم کا حلف اٹھایا ۔ سپریم کورٹ نے خواجہ آصف کی تاحیات نااہلی ختم کی۔

3جون: عائشہ احد، تشدد کیس میں سپریم کورٹ کے حکم پر حمزہ شہباز کیخلاف 7سال بعد مقدمہ درج کر کیا گیا۔ فضل الرحمن نے نگران وزیراعلیٰ سندھ کا حلف اٹھا لیا۔

4جون: میرپور میں وین کھائی میں گرنے سے 14افراد جاں بحق، 4 زخمی ہوگئے۔ افغانستان سے باجوڑ اور بلوچستان میں حملے، 5 جوان زخمی،6 دہشت گرد ہلاک ہوئے۔

لائن آف کنٹرول پر بھارتی گولہ باری سے کمسن بچی شہید ،24 افراد زخمی ہوئے۔ جوابی فائرنگ سے 2 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے۔

6جون: 6 رکنی وفاقی کابینہ نے حلف اٹھالیا، ڈاکٹرشمشاداختر، عبداللہ حسین، اعظم خان، سیدعلی ظفر، یوسف شیخ، روشن خورشید حلف اٹھانے والوں میں شامل تھے۔

9 جون:گورنرپنجاب ملک رفیق رجوانہ نے ڈاکٹر حسن عسکری سے نگران وزیراعلیٰ پنجاب کا حلف لے لیا۔

16جون: پاکستان میں عیدالفطر بھر پور مذہبی جوش وجذبے سے منائی گئی۔ پاک افغان سرحد، پاکستانی چوکیوں پر حملے، 3جوان شہید، 5دہشت گرد ہلاک۔ نگران پنجاب کابینہ میں توسیع کی گئی، 4 نئے وزراءنے حلف اٹھایا ۔

21جون: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے عام انتخابات میں امن وامان برقرار رکھنے کیلئے ساڑھے 3لاکھ فوج مانگے۔

24جون: پاک فوج کی جنوبی وزیرستان میں کارروائی کے دوران 6 دہشت گرد ہلاک، 2 جوان شہید ہوئے ۔ پنجاب میں ن لیگی امیدواروں کا اعلان، 116قومی، 190 صوبائی حلقوں میں ٹکٹ جاری کئے گئے۔

27جون: نگران پنجاب کابینہ نے 4 ماہ کیلئے 693 ارب روپے بجٹ کی منظوری دی 30جون: پی ٹی آئی نے الیکشن کیلئے امیدواروں کی فہرست جاری کی ۔

جولائی 2018ء

یکم جولائی: پٹرول 7.54،ڈیزل 14روپے فی لٹرمہنگا ہوا، پٹرول کی نئی قیمت 99.50،ڈیزل 119.31روپے فی لٹرہوئی (نگران حکومت نے دوسری بار قیمتیں بڑھائیں)۔ عام انتخابات کیلئے امیدواروں کی حتمی فہرستیں آویزاں، انتخابی نشان الاٹ کئے گئے۔

4جولائی: طوفانی بارشیں ہوئیں، لاہور ڈوب گیا، 9 جاں بحق، سڑکیں، انڈرپاس تالاب بن گئے۔ 16 گھنٹوں میں 300 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔

7جولائی: ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں نوازشریف کو10، مریم نواز7، صفدر کو1سال قید کی سزا، سابق وزیراعظم کو 80، مریم کو 20 لاکھ پاﺅنڈ جرمانہ کیا گیا ۔

11جولائی: پشاور میں اے این پی کے جلسہ پر خودکش حملہ، ہارون بلورسمیت 13جاں بحق، 53 زخمی ہوئے۔

14جولائی: مستونگ، ریلی میں دھماکہ، سراج رئیسانی سمیت 128 جاں بحق، 122زخمی ہوئے۔

17جولائی: امریکی ڈالر7.40 روپے مہنگا ہو کر 129روپے کا ہوگیا۔ غیرملکی قرضے 800 ارب بڑھ گئے۔

20 جولائی:اڈیالہ جیل میں نوازشریف، مریم نواز سے 23 ن لیگی رہنماﺅں نے ملاقات کی۔۔

25 جولائی: عام انتخابات 2018ءکا انعقاد ہوا۔ ملک بھر میں 85 ہزار سے زائد ولنگ سٹیشنز پر پولنگ ہوئی۔

26 جولائی: کوئٹہ میں پولنگ سٹیشن کے باہر دھماکہ ہوا، 32 جاں بحق ہوئے۔

27جولائی: عام انتخابات میں تحریک انصاف فاتح جماعت کے طور پر سامنے آئی

28 جولائی: انتخابی نتائج مسترد، اے پی سی کاتحریک چلانے کا اعلان کیا۔

29جولائی: مسلم لیگ ن کا اسمبلیوں میں بیٹھنے کا فیصلہ۔ پنجاب میں 4آزادارکان تحریک انصاف میں شامل ہوئے۔

اگست 2018ئ

یکم اگست: امریکہ نے کہا کہ آئی ایم ایف پاکستان کو بیل آﺅٹ پیکیج دینے سے بازرہے۔ پرویزالٰہی کوسپیکرپنجاب اسمبلی بنانے کافیصلہ کیا گیا۔آمدن سے زائداثاثہ کیس میں: عبدالعلیم خان 8، چوہدری شجاعت،پرویزالٰہی 16اگست کو عدالت طلب کیا گیا۔

2اگست: گیلانی سمیت 18شخصیات، اداروں کیخلاف نیب ریفرنسز کی منظوری دی گئی۔ منی لانڈرنگ کیس میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور کی جے آئی ٹی میں طلبی ہوئی۔

3اگست: عمران خان نے کہا کہ خود پروٹوکول لوں گا نہ کسی کو لینے دوں گا۔ اپوزیشن نے وزیراعظم کیلئے متفقہ امیدوار لانے کا فیصلہ کیا۔ امریکہ نے پاکستان کی امداد کم کر کے 15کروڑ ڈالر کردی

شہباز شریف کے خلاف صاف پانی کمپنی کیس کا سی ای او وسیم اجمل وعدہ معاف گواہ بنا۔ توہین عدالت کیس میں طلال چوہدری کو 5 سال کے لئے نااہل قرار دیا گیا۔

4اگست: شہبازدور کے ٹھیکوں کی تفصیلات طلب کی گئیں۔دیامراو رچلاس میں دہشت گردوں نے 12سکول نذرآتش کردیئے۔ گورنرسندھ محمد زبیر کا استعفیٰ منظور کیا گیا۔ اسحاق ڈار اور انوشہ رحمان کے خلاف 480 ارب کی خلاف ضابطہ ادائیگی اور غیرقانونی ٹھیکے دینے کاالزام لگا۔

5 اگست: NA-131،عمران خان کی کامیابی کا نوٹیفکیشن روکنے کا حکم دیا گیا۔ ایف آئی اے نے زرداری اور فریال تالپور کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ کیا ۔

دیامر میں ایک سکول پر حملے میںایک کانسٹیبل شہید ہوا۔ سوات سے کراچی جانے والی بس اور آئل ٹینکر میں تصادم ہوا جس میں21 افراد جاں بحق اور 42 زخمی ہوئے۔

6 اگست: بجلی کا بحران شدید ہوا، شہر شہر مظاہرے، شارٹ فال 6 ہزار 250 میگاواٹ تک جا پہنچا۔ پیراگون ہاﺅسنگ سکینڈل میں خواجہ سعدرفیق کو 15اگست کو نیب میں طلب کیا گیا۔

7 اگست: عمران خان وزارت عظمیٰ کیلئے امیدوار ہوئے۔

8اگست: نومنتخب اراکین کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا۔عمران خان عمران خان ہیلی کاپٹرکیس میں نیب میں پیش ہوئے۔ پھلروان میں 2 گروپوں میں فائرنگ کے نتیجے میں 3 بھائیوں سمیت 5 افراد جاں بحق ہوئے۔

9 اگست: الیکشن میں مبینہدھاندلی کے خلاف متحدہ اپوزیشن نے الیکشن کمیشن کے باہر مظاہرہ کیا۔ حسن اورحسین نواز کو بلیک لسٹ میں شامل کیا گیا۔

10اگست: قومی اسمبلی کا اجلاس 13اگست کو طلب کیا گیا۔ اڈیالہ جیل میں نوازشریف سے شہبازشریف، اچکزئی، غلام بلورسمیت 40 رہنماﺅں نے ملاقات کی۔

12اگست: جماعتوں کو مخصوص نشستیں الاٹ کی گئیں، پی ٹی آئی مرکز اور پنجاب میں آگے قرار پائی۔ گلگت میں پولیس چوکی پر حملہ ہوا جس میں 3 اہلکار شہید جبکہ 2 دہشت گرد ہلاک ہوئے۔

14اگست: پاکستان کا 71واں یوم آزادی منایا گیا۔ خان عمران، شہباز شریف، آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری سمیت 324 اراکین قومی اسمبلی نے حلف اٹھالیا۔

15اگست: کشمیریوں کی سبز ہلالی پرچم کو سلامی، بھارتی یوم جمہوریہ پر ”یوم سیاہ“ منایا گیا۔ پاکستان نے اپنے پہلے ریموٹ سیٹلائٹ کا کنٹرول حاصل کر لیا۔

16 اگست: اسد قیصر سپیکر قومی اسمبلی، اور قاسم سُوری ڈپٹی سپیکر منتخب ہوئے۔

17اگست کو پنجاب اسمبلی میں پرویزالٰہی سپیکر اور دوست مزاری ڈپٹی سپیکر منتخب ہوئے۔ 12ن لیگی ارکان نے بغاوت۔

محمود خان وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ، مرادعلی شاہ وزیراعلیٰ سندھ، عبدالقدوس بزنجو سپیکر بلوچستان منتخب ہوئے۔

18اگست کو عمران خان وزیراعظم پاکستان منتخب ہوئے۔ انہوں نے 176ووٹ لیے جب کہ ان کے مد مقابل میاں شہبازشریف کو 96 ووٹ مل سکے۔ سینیٹ کمیٹی میں انکشاف ہوا کہ ملک کا گردشی قرضہ 1148 ارب ہو گیا ہے۔

سپاٹ فکسنگ کیس میں ناصر جمشید پر 10سال کی پابندی عائد کی گئی۔

19اگست: عمران خان نے حکومت سنبھال لی، کابینہ کااعلان اور عارف علوی صدارتی امیدوار نامزد ہوئے۔

20اگست کو عثمان بزدار وزیراعلیٰ پنجاب منتخب ہوئے۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے عہدے کا حلف اٹھا لیا۔

21 اگست : نوازشریف اور مریم نواز کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی منظوری دی گئی۔ نجم سیٹھی مستعفی ہوئے اور احسان مانی پی سی بی کے نئے چیئرمین مقرر ہوئے،....

22اگست کو پاکستان بھر میں عیدالاضحی مذہبی جوش وخروش سے منائی گئی۔

25 اگست کوپاک فوج کے 6 لیفٹیننٹ جنرلز کے تبادلے ہوئے۔ ندیم رضا چیف آف جنرل اسٹاف مقرر ہوئے۔ صدر، وزیراعظم اور ارکان اسمبلی کے صوابدیدی فنڈز ختم کر دئے گئے۔

27اگست: پنجاب کی 23 رکنی کابینہ کا اعلان ہوا۔ قائداعظم کے ساتھی احمد سعید کرمانی کا95 برس کی عمر میں انتقال ہوا۔

28اگست: 23 رکنی پنجاب کابینہ نے حلف اٹھایا ۔ عمران اسماعیل نے گورنرسندھ کے عہدے کا حلف اٹھا لیا۔

30اگست: سپریم کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے 10سالہ اثاثوں کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم دیا۔

ستمبر2018ئ

یکم ستمبر: ڈیزل 6.37، پٹرول 2.41 روپے سستا ہوا، پٹرول کی نئی قیمت 92 روپے 83پیسے جب کہ ڈیزل کی 106روپے 57 پیسے مقرر کی گئی۔

2 ستمبر: چیف جسٹس پاکستان نے ہسپتال پر چھاپہ مارا، شرجیل میمن کے کمرے سے شراب برآمد ہوئی۔

3ستمبر: پنجاب میں ہیلتھ کونسل بجٹ بند کیا گیا۔

5ستمبر: عارف علوی ملک کے 13ویں صدر منتخب ہوئے نندی پور پاورپراجیکٹ کیس بابراعوان، راجہ پرویزاشرف کیخلاف ریفرنس دائر کیا گیا۔

6ستمبر: یوم دفاع پاکستان بھرپور ملی جوش وجذبے کے ساتھ منایاگیا۔

8ستمبر: وزیراعظم نے اپیل کی کہ ملک کا سب سے بڑا مسئلہ پانی ہے، بیرون ملک ہر پاکستانی 1000ڈالر ڈیم فنڈکیلئے دے۔ پنجاب کابینہ میں توسیع کی گئی، 9 وزرائ، 3مشیر شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ محمدطاہر پنجاب، کلیم امام سندھ، اور صلاح الدین پختونخواہ کے آئی جی پولیس تعینات ہوئے۔ وفاقی کابینہ میں توسیع کی گئی، عمرایوب، علی زیدی، میاں محمد سومرو اور مراد سعید کو وزیر بنانے کا فیصلہ ہوا۔

10ستمبر: وزیراعظم عمران خان نے چینی وزیرخارجہ سے ملاقات کی۔

11ستمبر: بیگم کلثوم نواز کا لندن کے ہارلے سٹریٹ کلینک میں انتقال ہوا۔ صدر عارف حلوی نے حلف اٹھا لیا۔

12ستمبر: نوازشریف، مریم نواز، کیپٹن (ر) صفدر پیرول پر رہا اور لاہور منتقل ہوئے، 6 نئے وفاقی وزراءنے حلف اٹھایا۔

13ستمبر: حکومت نے فنانس بل 2018-19ءمیں ترامیم کرکے پیش کرنے کا فیصلہ کیا۔ نیپرا نے بجلی 4روپے یونٹ مہنگی کرنے کی سمری بھجوائی۔

14 ستمبر: وزیراعظم ہاﺅس کو یونیورسٹی، گورنرہاﺅسز کو میوزیم بنانے کا فیصلہ کیا۔

15ستمبر: مولانا طارق جمیل نےکلثوم نواز کی نماز پڑھائی، مرحومہ کی تدفین جاتی امرا میں کی گئی۔

17ستمبر: بیگم کلثوم نواز کی رسم قل ادا کی گئی۔ آصف زرداری، بلاول، چودھری شجاعت نے مرحومہ کو خراج عقیدت پیش کیا، نوازشریف سے تعزیت کی۔

18ستمبر: گیس 143فیصد تک مہنگی کی گئی۔

19ستمبر: منی بجٹ میں سگریٹ، بڑی گاڑیاں اور موبائل فون مہنگے ہوئے۔ وزیراعظم عمران دورہ سعودیہ کے لئے مدینہ منورہ پہنچے۔

20ستمبر: نوازشریف، مریم نواز اور صفدر رہا ہوئے۔ ایشیاکپ میں بھارت نے پاکستان کو 8 وکٹوں سے شکست دی۔

25ستمبر: لیگی دور کے ایل این جی معاہدے سامنے لانے کا فیصلہ کیا گیا۔

26ستمبر: امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ سے شاہ محمود کی ملاقات، پاک امریکہ تعلقات کی بحالی پر اتفاق ہوا۔

27 ستمبر:بجلی مزید مہنگی کی گئی 1.16روپے یونٹ مہنگی کی گی۔

28 ستمبر: سیمنٹ 80 روپے فی بوری مہنگا ہوا۔

29ستمبر: وزیراعظم سے آرمی چیف، آئی ایس آئی سربراہ نے ملاقات کی۔

اکتوبر 2018ئ

یکم اکتوبر: بھارتی فوج کی وزیراعظم آزادکشمیر کا ہیلی کاپٹر مار گرانے کی کوشش، فاروق حیدر بال بال بچ گئے۔

سندھ اسمبلی میں 9ماہ کے لئے 8 کھرب 51 ارب 90 کروڑ کا بجٹ منظور کیا گیا۔

2 اکتوبر: پاکستان نے سعودی عرب سے 90 روز کیلئے تیل ادھار مانگا۔ سعودی وفد نے توانائی منصوبوں میں سرمایہ کاری کی یقین دہانی کرائی۔

3اکتوبر: افغانستان سے پاکستانی چیک پوسٹ پر فائرنگ کی گئی۔ بلوچستان میں لیویز کی 2 گاڑیوں پر بم حملوں میں 5 اہلکارشہید اور 8 زخمی ہوئے۔

4اکتوبر: مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی نے ضمنی انتخابات مل کر لڑنے کا اعلان کیا ، نان فائلرز کے زمین، گاڑی خریدنے پر دوبارہ پابندی لائی گئی۔

6 اکتوبر: آشیانہ ہاﺅسنگ سکینڈل میں میاں شہبازشریف گرفتار ہوئے۔ ....

12اکتوبر: اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو برطرف کیا گیا۔

18اکتوبر: زینب کے قاتل عمران کو کوٹ لکھپت جیل میں تختہ دار پر لٹکا دیا گیا، دوہری شہریت کیس میں ن لیگ کے سینیٹر ہارون اختر اور سعدیہ عباسی نااہل قرار پائے۔

23اکتوبر: جسٹس انوارالحق نے چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ کا حلف اٹھایا۔سعودی عرب کا پاکستان کے لئے 12ارب ڈالر پیکیج کا اعلان

27اکتوبر: پاکستان نے امریکہ، برطانیہ سمیت اہم ممالک میں سفیر بدلنے کا اعلان کیا۔ وزیراعظم کی ہمشیرہ علیمہ خان سمیت کئی اہم شخصیات دبئی میں جائیدادوں کی مالک نکلیں۔

29اکتوبر: نوازشریف نے اے پی سی میں شرکت سے انکار کیا، مولانا فضل الرحمان بھی قائل نہ کر سکے۔

کوہستان میں وین کھائی میں جاگری، 17افراد جاں بحق ہوگئے۔ حضرت داتاگنج بخشؒ کے عرس کی تقریبات کا آغاز ہوا۔

31اکتوبر: 5 سابق وزرائے اعظم سمیت 71سیاست دانوں، بیوروکریٹس کے خلاف نیب کی تحقیقات شروع ہوئیں۔

کرکٹر شعیب ملک اور ثانیہ مرزا کے ہاں بیٹے کی پیدائش ہوئی۔

نومبر 2018ئ

یکم نومبر: توہین رسالت کیس میں آسیہ بی بی بری، سزائے موت کا فیصلہ کالعدم قرار دیا گیا۔

پٹرول 5، ڈیزل 6.37 روپے، مٹی کا تیل 3 روپے فی لٹر مہنگا ہوا۔

3نومبر: حکومت سے معاہدے کے بعد تحریک لبیک کا دھرنا ختم ہوا۔ مولاناسمیع الحق قاتلانہ حملے میں شہید ہوئے۔

4نومبر: پاکستان اور چین کے مابین 15معاہدوں ، مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط ہوئے۔ مولانا سمیع الحق کی نمازجنازہ مدرسہ حقانیہ میں ادا کی گئی۔

5 نومبر: پاکستان اور چین نے اپنی کرنسی میں تجارت کا فیصلہ ، دفاعی تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا۔

9نومبر: شاعر مشرق علامہ محمد اقبال ؒکا یوم ولادت منایا گیا۔

وفاقی وزراءکے سرکاری خرچ پر بیرون ملک جانے پر پابندی عائد کی گئی

12نومبر: 10ممالک میں 700 ارب کی منی لانڈرنگ کا سراغ ملا۔

14نومبر: راولپنڈی میں آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کی زیرصدارت 215 ویں کورکمانڈر کانفرنس منعقد ہوئی۔

17نومبر: سینیٹ میں الیکشن ترمیمی بل 2018ءمتفقہ طور پر منظور ہوا۔

19نومبر: عالمی تبلیغی جماعت کے امیر حاجی عبدالوہاب انتقال کر گئے، نمازجنازہ میں لاکھوں افراد کی شرکت۔

مولانانذرالرحمان تبلیغی جماعت کے نئے امیر مقرر ہوئے۔

نومبر: پاکستان اور بھارت کا کرتارپور سرحد کھولنے کا فیصلہ ، بھارتی کابینہ نے منظوری دیدی۔

وزیراعظم عمران خان نے 5 سالہ اقتصادی پلان کی منظوری دی ۔

24نومبر: کراچی میں چینی قونصل خانے پر دہشت گرد حملہ ناکام ہوا، 2 پولیس اہلکار،2 شہری جاں بحق ہوئے۔

اورکزئی بازار میں خودکش دھماکہ، 33 افراد جاں بحق اور 56 زخمی ہوئے۔

27نومبر: وزیراعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی نے ایف آئی اے اہلکار کو تھپڑمارے ۔ پیراگون ہاﺅسنگ سکینڈل میں گرفتار قیصرامین بٹ خواجہ سعدرفیق کیخلاف وعدہ معاف گواہ بنے۔

28 نومبر: وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کا سنگ بنیاد رکھا۔ نوجوت سنگھ سدھوسمیت بھارتی وفد نے تقریب میں شرکت کی۔

کراچی میں 4 روزہ عالمی دفاعی نمائش منعقد ہقئی، امریکہ، برطانیہ، روس، چین سمیت 52 ممالک شریک ہوئے۔

30نومبر: بھارتی آرمی چیف نے پاکستان اور مقبوضہ کشمیر میں ڈرون حملوں کی دھمکی دی۔

دسمبر 2018ئ

یکم دسمبر: ڈالرکی اُونچی اڑان، 142روپے کو چھوگیا، شرح سود میں 1.5فیصد اضافہ ہوا، مہنگائی بڑھی جس کی وجہ سے عوام میں پریشانی کی لہر دوڑ گئی۔

2 دسمبر: علامہ خادم رضوی، افضل قادری کے خلاف بغاوت، دہشت گردی کے مقدمات، حکومت نے گور نرہاﺅس لاہور کی دیواریں گرانے کا حکم دیا۔ جس پر شدید تنقید کی گئی۔

3دسمبر: چین نے اعلان کیا کہ پاکستان کو قرض نہیں بیل آﺅٹ پیکیجز دیں گے،.... پاکستان سٹیل ملز کی اربوں مالیتی 344 ایکڑ زمین پر قبضہ کا آڈٹ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا۔

7دسمبر: آشیانہ سکینڈل، شہباز شریف کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعامسترد، جوڈیشل ریمانڈ منظور، کوٹ لکھپت جیل منتقل.... اعظم سواتی وزارت سے مستعفی....

10دسمبر: چیئر مین نیب نے کہا کہ احتساب سب کا، جو کرپشن کرے گا وہ بھرے گا جب کہ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مشکل وقت سے جلد نکل آئیں گے:

13دسمبر: آرمی چیف نے کہا کہ ملکی وغیرملکی سرمایہ کاروں کو تحفظ فراہم کیا جائے گا۔ چیف جسٹس آف پاکستان نے کا تھر کے دورہ کے دوران آراوپلانٹ کا دورہ کیا ۔

14دسمبر: وزیراعظم عمران خان کی بہن علیمہ خان کو 2کروڑ 94 لاکھ جمع کرانے کا حکم دیا گیا۔ عدالت نے مہنگے نجی سکولوں کو فیس 20 فیصد کم کرنے کا حکم دیا۔ میاں شہبازشریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر حکومت راضی ہوئی۔

15دسمبر: تربت میں بارودی سرنگ پھٹنے سے 6 اہلکار شہید، آپریشن میں 4 دہشت گرد ہلاک۔ وزیراعظم نے کہا کہ وزراءکام نہ کرنے والے بیوروکریٹس کو نکال دیں۔

16دسمبر: راحیل شریف کا این او سی غیرقانونی قرار دیا گیا.... بھارتی ریاست دہشت گردی کی انتہا کر دی۔ ظالمانہ کارروائیوں میں 14کشمیری شہید کر دیئے گئے۔ چیف جسٹس نے افضل کھوکھر، سیف الملوک کھوکھر کا سامان ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیا،

18دسمبر: پلوامہ میں شہادتوں کی مذمت کی گئی، گولیوں سے نہتے بہادر کشمیریوں کو دبایا نہیں جا سکتا، پاک آرمی نے کشمیریوں پر بھارتی ریاستی دہشتگردی، کنٹرول لائن پر شہری آبادی کو نشانہ بنانے کے اقدام کی مذمت کی ۔

19دسمبر: پنجاب حکومت نے بسنت پر عائد پابندی ختم کی .... برٹش ایئرویز نے 10سال بعد پروازیں بحال کرنے کا اعلان کیا۔

20دسمبر: نوازشریف کا ریفرنسز کا فیصلہ محفوظ کیا گیا۔ حکومت نے بجلی 1.27روپے مہنگی کرنے کی منظوری دی

21دسمبر: کشمیر میں ظلم روکنے کے حوالے سے عمران خان نے یو ایس سیکرٹری جنرل کو فون کیا۔ ن لیگ نے نوازشریف کی گرفتاری پر رابطہ عوام مہم چلانے کا فیصلہ کیا۔

22 دسمبر: کشمیر میں مزید6 کشمیریوں کو شہید کر دیا گیا۔ آشیانہ سکینڈل کا ضمنی ریفرنس دائر کیا۔

23 دسمبر: خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 15روزکی توسیع کی گئی۔ توہین عدالت کیس میں گرفتار سابق سینیٹر فیصل رضاعابدی کو اڈیالہ جیل سے رہا گیا۔ کرتارپورکوریڈور منصوبہ کے ضمن میں دریائے راوی پر پل کی تعمیر شروع کی گئی۔14ضلعی چیئرمین پی ٹی آئی میں شامل ہوئے۔ آشیانہ سکینڈل کا ضمنی ریفرنس دائر کیا۔

24دسمبر: احتساب عدالت نے العزیزیہ ریفرنس میں مسلم لیگ ن کے رہنما نوازشریف کو 7 سال قید، 250 کروڑ امریکی ڈالر جرمانہ کیا، العزیزیہ سٹیل مل اورہل میٹل جائیداد ضبطگی کی سزاسنائی، نواز شریف کو 10سال کے لئے سرکاری عہدوں کے لئے نااہل بھی قرار دیا گیا، نوازشریف کو کمرہ عدالت سے گرفتار کیا گیا۔ جعلی اکاﺅنٹس کیس میں اومنی گروپ کی جائیداد منجمد، آصف علی زرداری اور ملک ریاض کو نوٹسز جاری کئے گئے۔

٭٭٭


ای پیپر