New Zealand tour, National team, pandemic test, negative, PCB
01 دسمبر 2020 (09:57) 2020-12-01

کرائسٹ چرچ: پاکستان ٹیم کا دورہ نیوزی لینڈ، قومی ٹیم کے 46 رکنی ارکان میں سے 42 کھلاڑیوں اور ٹیم آفیشلز کے ٹیسٹ منفی آگئے۔

محکمہ ہیلتھ نیوزی لینڈ کے مطابق، 3 کھلاڑیوں کے ٹیسٹ کا جائزہ لیا جا رہا ہے، ایک رکن کے ٹیسٹ کا رزلٹ آنا باقی ہے۔

قومی ٹیم کے اسکواڈ کے دو ٹیسٹ پاکستان جبکہ نیوزی لینڈ محکمہ صحت اب تک 2 ٹیسٹ کر چکی ہے، قومی ٹیم نیوزی لینڈ میں 8 روز سے آئسولیٹ ہے۔

6 کھلاڑیوں کے ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد حکومت نیوزی لینڈ میں تشویش کی لہر دوڑ گئی تھی، پاکستان ٹیم کے کھلاڑیوں کو آئسولیشن کی خلاف ورزی پر آخری وارننگ دی گئی تھی، پاکستان ٹیم دورہ نیوزی لینڈ میں دو ٹیسٹ اور تین ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلے گی۔

یاد رہے کہ اس حوالے سے پی سی بی نے نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ سے رابطہ کیا تھا جس کے بعد نیوزی لینڈ میں موجود قومی اسکواڈ کی آئسولیشن میں کرنی کر دی گئی تھی۔

نیوزی لینڈ میں موجود قومی اسکواڈ کو دوبارہ چہل قدمی کی اجازت مل گئی تاہم نیوزی لینڈ میں موجود مزید ایک پاکستانی کرکٹر کا ٹیسٹ مثبت آگیا جس کے بعد کھلاڑیوں کی تعداد ساتھ ہوگئی۔

واضح رہے کہ جن کرکٹرز کے مسلسل دوٹیسٹ منفی آچکے انہیں چہل قدمی کی اجازت ملی، سپورٹنگ اسٹاف اور کھلاڑی مقرر کردہ مخصوص اوقات میں چہل قدمی کر سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ اسکواڈ ممبرز کو بالکونیز میں جانے کی بھی اجازت مل گئی۔

یاد رہے کہ پی سی بی کی جانب سے نیوزی لینڈ جانے سے قبل کروائے گئے ٹیسٹ کے سیمپل ری ٹیسٹنگ کروانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ پی سی بی ذرائع کے مطابق 6 کھلاڑیوں کا ٹیسٹ دبئی سے نیوزی لینڈ جاتے ہوئے پوزیٹو آیا تھا۔

پی سی بی اعلیٰ حکام نے قومی کپتان بابر اعظم اور اعلیٰ حکام سے ٹیلی فونک رابطہ بھی کیا پی سی بی نے قومی کرکٹ ٹیم کو پیغام دیا کہ کرکٹ بورڈ اور پوری قوم آپ کے ساتھ ہے ہمت اور حوصلے کے ساتھ آئسولیشن کا ٹائم گزاریں۔


ای پیپر