Second wave, pandemic, deaths cases, NCOC, WHO
01 دسمبر 2020 (09:23) 2020-12-01

لاہور: عالمی وبا کی دسری لہر ملک میں خطرے کی گھنٹی بجا چکی ہے، یومیہ اموات کی تعداد میں مسلسل تشویشناک اضافہ جاری ہے، اموات کی شرح 2.02 فیصد ہوگئی ہے جبکہ عالمی سطح پر یہ تعداد 2.32 فیصد ہے، جبکہ مثبت کیسز کی شرح 8.53 فیصد ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق 24 گھنٹوں کے دوران مزید 67 افراد دم توڑ گئے، مرنے والوں کی مجموعی تعداد 8 ہزار 91 ہوگئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق عالمی وبا سے جاں بحق 76 فیصد افراد کی عمریں 50 سال سے زائد ہیں، وبا کے 2 ہزار 458 نئے کیس رپورٹ ہونے کے بعد متاثرین کی تعداد 4 لاکھ 482 ہوچکی ہے۔

دوسری جانب عالمی وبا دنیا میں 6 کروڑ 35 لاکھ 84 ہزار سے زائد افراد کو متاثر کرچکا ہے اور 14 لاکھ 73 ہزار 741 افراد کی جان لے چکا ہے۔

اس وقت ایکٹو کیسز کی تعداد ایک کروڑ 80 لاکھ 59 ہزار کے قریب ہے۔

امریکہ اور بھارت میں عالمی وبا کی صورتحال سب سے خوفناک ہے جہاں سب سے زیادہ متاثرین موجود ہیں اور اموات کی تعداد بھی سب سے زیادہ ہے۔

ادھر ترکی نے بڑھتے ہوئے کیسز کم کرنے کے لیے ہفتے کے آخر تک مکمل لاک ڈاون نافذ کرنے کا عندیہ دیا ہے۔ محققین کے مطابق انگلینڈ میں لاک ڈاؤن کے دوران وبا کے کیسز میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔

واضح رہے کہ عالمی وبا کی دوسری لہر نے پوری دنیا کو نئی مشکل میں ڈال دیا ہے۔ پہلی لہر کے بعد ابھی اللہ اللہ کرکے پوری دنیا کے حالات بہتر ہوئے ہی تھے کہ دوسری لہر نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔

یاد رہے کہ عالمی وبا کی وجہ سے دنیا کے بڑے بڑے ملکوں کو معاشی طور پر کافی نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔ اس کے علاوہ کھیلوں کی سرگرمیاں بھی بہت متاثر ہوئیں۔


ای پیپر