Source : File Photo

پنجاب کی سیاست کا نیا رُخ،ن لیگ کی حکمت عملی سامنے آگئی
01 اگست 2018 (00:02) 2018-08-01

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ تمام رکاوٹوں اور سازشوں کے باوجود مسلم لیگ (ن) عام انتخابات میں بڑی جماعت کے طور پر سامنے آئی ہے ، پنجاب میں حکومت بنانے کی پوری کوشش کریں گے ،حکومت نہ بنا سکے تو بھرپور اپوزیشن کا کردار ادا کریں گے ، اراکین ثابت قدم رہیں کسی کے جھانسے میں نہ آئیں ، اراکین اپنی توجہ اگلے انتخابات پر مرکوز رکھیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاﺅن میں پارٹی کے نو منتخب اراکین پنجاب اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ شہباز شریف نے تمام اراکین سے ان کی نشستوں پر جا کر ملاقات کی اور انہیں کامیابی پر مبارکباد دی ۔ اس موقع پر سردار ایاز صادق، حمزہ شہباز، رانا ثنا اللہ خان، رانا محمد اقبال ، ملک ندیم کامران سمیت دیگر بھی موجود تھے ۔ اجلاس میں پنجاب میں حکومت بنانے اور اپوزیشن کا کردار نبھانے کے آپشنز پر بھی غور وخوض کیا گیا ۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں لاہور اور قصور سے تعلق رکھنے والے اراکین نے تجویز دی کہ حمزہ شہباز شریف کو پنجاب میں قائد حزب اختلاف نامزد کیا جانا چاہیے ۔شہباز شریف نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) اقتدار کی نہیں اقدار کی سیاست کرتی ہے ۔ اللہ نے چاہا تو ہم حکومت بنائیں گے ،اگر ہم اپوزیشن میں بھی بیٹھے تو بھرپور کردار نبھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جعلی مینڈیٹ لے کر آنے والی جماعت کا ڈٹ کر مقابلہ کیا جائے گا ۔ شہباز شریف نے کہا کہ ہم نے دس سال عوام کی خدمت کی ہے ،مسلم لیگ (ن) عوامی خدمت کا سفر جاری رکھے گی۔

انہوں نے کہا کہ اراکین ثابت قدم رہیں کسی کے جھانسے میں نہ آئیں ،مسلم لیگ (ن) کے اراکین اپنی توجہ اگلے الیکشن پر مرکوز رکھیں ،جو پارٹی چھوڑ کر گئے ہیں ان کا مستقبل تاریک ہے ۔شہباز شریف نے کہا کہ اراکین اسمبلی نے مشکل حالات میں بھی نوازشریف کی لیڈر شپ میں کامیابی حاصل کی ہے ،انتہائی ناسازگار اورمشکل حالات میں آپ جیت کر آئے ہیں جس پر شکریہ ادا کرتا ہوں۔


ای پیپر